چار سالوں میں بی جے پی کو۹۴.۴۸۸ کروڑ، کانگریس کو ملا۶۵.۸۶ کروڑ روپئے چندہ

<h1 style='text-align: right; font-family:Jameel,Tahoma;direction: rtl;font-weight:normal;'>چار سالوں میں بی جے پی کو۹۴.۴۸۸ کروڑ، کانگریس کو ملا۶۵.۸۶ کروڑ روپئے چندہ</h1>

نئی دہلی۔ نو چناوی نیاسوں(الیکٹورل ٹرسٹ) نے ۱۴-۲۰۱۳ سے ۱۷-۲۰۱۶ کے دوران چار سال میں سیاسی پارٹیوں کو ۵۴.۶۳۷ کروڑ روپئے کا چندہ دیا ہے۔ سب سے زیادہ ۹۴.۴۸۸ کروڑ روپئے کا چندہ بی جے پی کو ملا ہے۔ اس کے بعد کانگریس کو ۶۵.۸۶ کروڑ روپئے کا چندہ ملا ہے۔ایسوسی ایشن فار ڈیموکریٹک ریفارمس کی ایک رپورٹ کے مطابق الیکٹورل ٹرسٹ کے ذریعہ دیئے گئے کل چندے میں سے ۳۰.۹۲ فیصد یعنی ۴۴.۵۸۸ کروڑ روپئے پانچ قومی سیاسی پارٹیوں کی جیب میں گئے ہیں۔ وہیں علاقائی پارٹیوں کے کھاتے میں صرف ۷۰.۷ فیصد یعنی ۰۹.۴۹ کروڑ روپئے کی رقم گئی ہے۔ نیشنل پارٹیوں میں سب سے زیادہ ۹۴.۴۸۸ کروڑ روپئے کا چندہ بی جے پی کو ملا ہے۔ اس کے بعد کانگریس کا نمبر رہا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ صرف بی جے پی اور کانگریس ہی دو ایسی پارٹیاں ہیںجنہیں ہر ایک مالی سال میں چندہ ملا ہے۔اے ڈی آر کی رپورٹ کے مطابق ۱۴-۲۰۱۳ میں الیکٹورل ٹرسٹوں نے سیاسی پارٹیوں کو ۳۷.۸۵ کروڑ روپئے کا چندہ دیا۔ ۱۵ – ۲۰۱۴ میں یہ آنکڑہ۴۰.۱۷۷ کروڑ روپئے، ۱۶- ۲۰۱۵ میں ۵۰.۴۹ کروڑ روپئے اور ۱۷- ۲۰۱۶ میں۲۷. ۳۲۵ کروڑ روپئے رہا۔

اس میں کہا گیا ہے کہ ۱۴ -۲۰۱۳ سے ۱۷ -۲۰۱۶  کے دوران نو رجسٹرڈالیکٹورل ٹرسٹوں نے کل۵۴.۶۳۷ کروڑ روپئے  کا چندہ دیا۔ ان میں سے صرف دو ٹرسٹوں پروڈینٹ اور سماج الیکٹورل ٹرسٹ نے دو بار سے زیادہ چندہ  دیا۔ کل رجسٹرڈ اکیس الیکٹورل ٹرسٹوں میں سے چودہ ا پنے رجسٹریشن کے بعد سے ان کے ذریعہ دیئے گئے چندے کی رپورٹ الیکشن کمیشن کو دے رہے ہیں۔ ستیہ پروڈینٹ الیکٹورکل ٹرسٹ اور مفاد عامہ الیکٹورل ٹرسٹ نے چاروں برسوں کے لئے ا پنے تعاون کا  بیورہ دیاہے۔

ستیہ الیکٹورل ٹرسٹ نے ۱۷ – ۲۰۱۶ کے دوران اپنا نام بدل کر پروڈینٹ الیکٹورل ٹرسٹ کردیا۔کل گیارہ ایسے چناوی ٹرسٹ ہیں جنہوں نے یا تو یہ اعلان کیا ہے کہ انہیں کسی طرح کا تعاون نہیں ملا یا پھر انہوں نے  اپنی رپورٹ نہیں دی ہے۔ کلیان الیکٹورل ٹرسٹ نے اپنے رجسٹریشن کے بعد سے ایک بار پھر رپورٹ  الیکشن کمیشن کو نہیں سونپی ہے۔

سرکار کے طئے ضابطہ کے مطابق چناوی ٹرسٹوں کو ایک مالی سال میں اپنی کل آمدنی کا ۹۵ فیصد سیاسی پارٹیوں کو چندے کی شکل میںدینا ہوتا ہے۔ اے ڈی آر کے مطابق سینٹرل ڈائرکٹ ٹیکس بورڈ کے پاس رجسٹرڈ اکیس چناوی ٹرسٹوں میں سے چودہ نے الیکشن کمیشن کو ۱۷- ۲۰۱۶ کے لئے اپنے تعاون کا بیورہ سونپا ہے۔ ان میں صرف چھ نے یہ اعلان کیا ہے کہ انہیں سال کے دوران کسی طرح کی تعاون یا چندہ حاصل  ہوا۔ ایک جن شکتی الیکٹورل ٹرسٹ ستمبر، ۲۰۱۷ میں رجسٹرڈ ہوئی ہے۔مالی سال ۱۷- ۲۰۱۶ کے دوران بی جے پی کو کل میں ۲۲.۸۹ فیصد یعنی ۲۲.۲۹۰ کروڑ روپئے کا چندہ ملا ہے۔دیگر نو سیاسی پارٹیوں کو صرف ۰۵.۳۵ کروڑ روپئے کا چندہ ملا ہے۔ اس میں سے کانگریس کو ۵.۱۶ کروڑ روپئے اور شرومنی اکالی دل کو نو کروڑ روپئے کا چندہ ملا ہے۔